روزہ رکھنے کے فوائد جان کر آپ پھر کبھی روزہ نہیں‌چھوڑے گے

اسلام میں کچھ ایسی عبادات ہے جو ہر بالغ و عاقل مسلمان پر فرض ہے ان میں سے ایک عبادت رمضان کے روزے ہیں‌جو ایک مہینہ تک رکھے جاتے ہیں‌لیکن کچھ لوگ ایسے کم بخت بھی ہوتے ہیں‌جو اس مقدس مہینے کے روزے جان بوجھ کر نہیں‌رکھتے . روزہ رکھنا صرف ایک فرض‌کو پورا کرنا ہی نہیں‌ہوتا بلکہ اس کے ساتھ انسان کو جسمانی اور روحانی فوائد کو پورا پیکج ملتا ہے ، جو کہ انسان جسم کے لئے نہایت فائدہ مند ہوتے ہیں‌ آج ہم آپ کو چند ایسے ہی فوائد کے بارےمیں‌بتاتے ہیں‌جن کو جان کر کوئی بھی روزہ ترک نہیں‌کرے گا


جلد کی تازگی

ماہرین صحت کے مطابق روزے کی حالت میں جسم ان ہارمونز کو پھیلاتا ہے جو جلد کی خوبصورتی، ناخنوں کی چمک اوربالوں کی مضبوطی کا موجب بنتے ہیں۔ یہاں تک کہ روزے سے انفیکشن بیکٹیریا کی روک تھام اور بڑھاپے کے خلاف مزاحمت کرتا ہے۔گرمی کے موسم میں آنے والے ماہ صیام میں انسانی جسم کو روزے کے عالم میں پانی کی زیادہ ضرورت محسوس ہوتی ہے، سخت گرمی میں جلد جھلس جاتی ہے جس پر ڈاکٹرز مشورہ دیتے ہیں کہ افطاری کے بعد اور سحری کے اوقات میں پانی کا بہ کثرت استعمال کیا جائے، اس سے جلد کو تازہ رکھا جاسکتا ہے۔ انسانی جلد اور ناخنوں پربھی روزے کے مثبت اثرات مرتب ہوتے ہیں۔ ناخن، سرکے بالوں کی نشونما اور ان کی مضبوطی میں اضافہ ہوتا ہے۔ انسانی اور چہرے کی رنگت پر مرتب ہونے والے اثرات ناخنوں پر بھی اثر انداز ہوتے ہیں۔
زہریلے مواد سے نجات


روزے کے بغیر انسانی جسم کی طاقت اور توانائی نظام انہضام کی وجہ سے صرف ہوتی ہے۔ مگر 12 گھنٹے کے روزے کے بعد جسم کی توانائی نظام انہضام کی ہدایت پرکام نہیں کرتی۔ بارہ گھنٹے کے روزے کے بعد انسانی جسم میں موجود زہریلا مواد اور دیگر فاسد مادے ختم ہو جاتے ہیں۔ یوں جسم کو فاسد مادوں سے نجات ملتی ہے۔

سد بڑھاپا


ڈاکٹر صیقر نے بتایا کہ یہ تاثر درست نہیں کہ روزہ انسان کو کمزور کر دیتا ہے۔ روزہ رکھنے سے انسان بڑھاپے کو روکنے کی کامیاب کوشش کر رہا ہوتا ہے۔ روزے کی حالت میں انسانی جسم میں موجود ایسے ہارمونز حرکت میں آجاتے ہیں جو بڑھاپے کے خلاف مزاحمت کرتے ہیں۔ روزے سے انسانی جلد مضبوط ہوتی اور اس میں جھریاں کم ہوتی ہیں۔انہوں نے حدیث نبوی کا بھی حوالہ دیا جس میں رسالت مآپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا تھا کہ ’’صوموا تصحوا‘‘ یعنی روزہ رکھو صحت پاؤ۔ ڈاکٹر صیقر کا کہنا تھا کہ ہفتے میں 16 گھنٹے کے ایک روزے سے انسانی جسم کو حیرت انگیز طبی فواید حاصل ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہر روز روزے کے طبی فواید سامنے آ رہے ہیں۔ روزہ کینسر، امراض قلب اور شریانوں کی بیماریوں کے آگے بھی ڈھال ہے۔

اس کے علاوہ اور بھی بہت سے فوائد ہیں جن کا تذکرہ یورپی محققین کی کتابوں‌میں‌موجود ہے . لیکن یاد رکھیں‌روزے کا تعلق اللہ کی رضا کے ساتھ ہے اور مسلمان اس نیت سے روزہ رکھتا ہے کہ وہ اللہ کی خوشنودی حاصل کریں چاہئے اس عبادت کا اسے کوئی بھی دنیاوی فائدہ ہو رہاہو یا نہ ہو . اس لئے روزہ کو اللہ کی عبادت سمجھ کر رکھیں‌.

اپنا تبصرہ بھیجیں