سنت نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کے مطابق روزہ رکھیں‌اور ہشاش بشاش رہے

رمضان شروع ہوچکا ہےاور پوری دنیا کے مسلمان یکسو ہو کر اس ماہ بابرکت سے اپنے حصے کی نعمتوں کے سمیٹنے میں‌مصروف ہو چکے ہیں‌. روزہ جہاں‌ہمارے روحانی علاج کا ایک ذریعہ ہے وہی ہمارے جسمانی سسٹم کو بھی ٹھیک کرتا ہے اور پورے سال کے لئے جسم دوبارہ سے تیار ہوجاتا ہے . اس کی وجہ سے معدہ قوی ہوتا ہے .اور اعضاء‌رئیسہ کی ایک طرح سے مکمل ٹیوننگ ہوجاتی ہے . ان‌خیالات کا اظہار پاکستان طبی کانفرنس لاہور ڈویژن کے زیر اہتمام ایک مجلس مذاکرہ میں ملک بھر سے آنے والے حکماء نے کیا . دور حاضر کی عام اور

پریشان کن امراض موٹاپا‘ بلڈپریشر‘ ذیابیطس‘ امراض قلب‘ معدہ‘ جگر‘ آنتوں اور گردوں کے امراض کے اسباب کا جائزہ لینے کے بعد یہ بات پائیہ ثبوت کو پہنچ چکی ہے کہ مندرجہ بالا امراض کی بڑی وجہ کھانے پینے میں بے اعتدالی، نظام ہضم کی خرابی اور روزمرہ معمولات میں عدم توازن جیسے عوامل شامل ہیں جس سے معدہ خراب ہو جاتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ روزہ رکھنے سے معدے کو آرام ملتا ہے،اس عرصہ میں معدہ کی اصلاح ہوتی ہے،روزہ رکھنے سے ’’قوت‘‘ ہضم کے عمل پر صرف ہونے کی بجائے بدن سے فاسد اور

ردی مادے خارج کرتی ہے جس سے جسم مضر صحت مواد سے پاک ہو جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یورپ میں روزہ کی طرز پرفاقے کو علاج کے لیے ایک مستقل طریق علاج کی حیثیت حاصل ہے، روزہ سے مختلف امراض کا علاج کیا جاتا ہے اور اس سے بہت سے مریض عروس صحت سے ہمکنار ہو جاتے ہیں ۔روزہ سے ہم اسی صورت فائدہ اٹھا سکتے ہیں جب سنت نبویﷺ کے مطابق افطاری و سحری کا اہتمام کیا جائے یعنی موجودہ موسم میں کھجور اور دودھ کے ساتھ افطاری اور سحری کے وقت سادہ اور ہلکی پھلکی غذا کھائی جائے۔جب کے اس کے

ساتھ تلی ہوئی چیزوں مرغن‌غذاؤں‌اور کولڈ ڈرنکس وغیرہ سے مکمل اجتناب کیا جائے . اور کوشش کی جائے کہ زیادہ سے زیادہ سادہ غذآ اور سبزیوں کا استعمال کیا جائے تا کہ جسم کو مکمل آرام ملے

اپنا تبصرہ بھیجیں